Tuesday, July 16, 2024
Homeشخصیاتکیا زخم ہے وہ زخم کہ مرہم نہیں جس کا

کیا زخم ہے وہ زخم کہ مرہم نہیں جس کا

از شاہ خالد مصباحی کیا زخم ہے وہ زخم کہ مرہم نہیں جس کا

کیا زخم ہے وہ زخم کہ مرہم نہیں جس کا

     نہ جانے کس بد خواہ نے علما اہل سنت پر یہ نظر بد ڈالی کہ    2020 کی ابتدائی دور ہی سے عالم سنیت پر  صف ماتم بچھ گئی ، کہ ایک غم فراق  سے چھٹکارا نہیں ملتا جوں ہی ایک اور خبر  رحلت  ہمارے سروں  پر منڈلانے لگتی ہے !۔

    چارہ نا دگر۔۔! جو  حضور صلی اللہ علیہ وسلم  کے اس فرمان  “ إن لله ما أخذ وله ما أعطى وكل شيء عنده بأجل مسمى… فلتصبر ولتحتسب” ہی کے ذریعہ صبر کرکے ،  دعاوں سے ہم آہنگ ہوکر نعم البدل کی تانک میں لگ جاتے ہیں ۔۔۔ 

         ابھی جماعت اہل سنت ،  جہاں اپنے حقیقی پاسبانوں کی ایک لمبی جماعت سے محروم ہوئی وہیں پر  آج علی الصبح  ایک اور  جوہر نایاب ، علمی قندیلوں کی جلنبیل ، طلباء کے لیے سرنبیل کی حیثیت رکھنے والے  مرد مجاہد  یعنی  معتمد حضور خطیب البراہین حضرت علامہ مولانا محمد عالمگیر نظامی صاحب (استاذ دارالعلوم اھل سنت تنویرالاسلام امرڈوبھا ضلع سنت کبیر نگر) کو بھی کھو بیٹھی اور اکتساب فیض کے لیے حضور والا کی ظاہری زندگی سے ہم محروم ہو بیٹھے۔۔! انا للہ و انا الیہ راجعون۔

  کیسے میں بھولوں

   اس جوہر شناس طنئیت کے مالک عبد الہی کو جس نے ہر لمحہ اپنی قیمتی وقت کو مجھ حقیر انسان پر خرچ کرکے ہر طرح کی رہنمائیوں سے سر فراز فرمایا ہے۔ 

     اب کیسے میں تلاش کروں اپنا رہبر و رہنما!۔

 کہ  سخن کا آخری در بند ہونے کی اس خبر نے ، کھڑکیوں کے پار بیٹھے غمگساروں اور جستجوئے علم   کی آنکھوں پر  گھٹا ٹوپ پٹی لگا دی ہے۔

یہ کس کی ناگہانی موت پر عالم سنیت چیخ پڑی ، جستجوئے علم بلک پڑے ، کسی کے کنج لب سے یہ غمزدہ خبر ،  میرے دل پر آن پڑی۔۔۔! 

میں اب  اس دنیا کے اک گوشے میں بیٹھا سوچتا ہوں

آج اس ویران منڈلی میں اور غموں کی بستی میں ، میں کس کو پرسہ دینے کے لیے یہ انداز تحریر آپنایا ۔۔!۔

 حتی کہ  مجھ کو تعزیت تو خود سے کرنی تھی۔۔!۔

          کہ آج میرا مشفق و مہرباں اپنے جگمگتے ہوئے   صورت کو میری نظروں میں چھوڑ کر ، ہمیشہ کے لیے اب مجھ سے رخصت ہوا۔۔۔!

      لیکن مولا ۔۔! ابھی اس کی ضرورت تھی ۔

        میں مانتا ہوں کہ یہاں صبحیں بھی آئیں گی

یہاں شامیں بھی اتریں گی ،  مگر میں  ہچکیاں لیتا ہوا ،ہمیشہ چراغ آرزو بن کر ، سر طاق لحد گونگی زمیں کی لب کشائی تک پکاروں گا ۔۔۔

کہ  برا ہو  حوادث موت کا جس نے مرے فریاد رس کی جان لے لی ! ۔

اللہ رب العزت حضور والا  کی مغفرت فرمائے ۔

                 شریک غم

  شاہ خالد مصباحی سدھارتھ نگری

رابطہ: 9554633547

اکابرین علما اہل سنت اور ہماری ذمہ داریاں 

گھر بیٹھے خریداری کرنے کا سنہرا موقع

  1. HAVELLS   
  2. AMAZON
  3. TATACliq
  4. FirstCry
  5. BangGood.com
  6. Flipkart
  7. Bigbasket
  8. AliExpress
  9. TTBazaar
afkareraza
afkarerazahttp://afkareraza.com/
جہاں میں پیغام امام احمد رضا عام کرنا ہے
RELATED ARTICLES

1 COMMENT

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

Most Popular

Recent Comments

قاری نور محمد رضوی سابو ڈانگی ضلع کشن گنج بہار on تاج الشریعہ ارباب علم و دانش کی نظر میں
محمد صلاح الدین خان مصباحی on احسن الکلام فی اصلاح العوام
حافظ محمد سلیم جمالی on فضائل نماز
محمد اشتیاق القادری on قرآن مجید کے عددی معجزے
ابو ضیا غلام رسول مہر سعدی کٹیہاری on فقہی اختلاف کے حدود و آداب
Md Faizan Reza Khan on صداے دل
SYED IQBAL AHMAD HASNI BARKATI on حضرت امام حسین کا بچپن